Top 10 similar words or synonyms for پرتیں

چٹانوں    0.720520

تودوں    0.712450

برفیلے    0.709374

تہیں    0.682771

موٹی    0.679255

گڑھوں    0.677691

تودے    0.670763

چٹانیں    0.670702

برف    0.653249

دھول    0.639161

Top 30 analogous words or synonyms for پرتیں

Article Example
فضیلہ مسعی تمہارے سرپہ بڑھتی برف کی پرتیں
مریخ پر زیر زمین پانی مریخ پر اکثر ایسی جگہیں جہاں گڑھوں کے تلوں میں پرتیں موجود ہوتی ہیں وہاں اوندھے خطے بھی ہوتے ہیں۔ 
مریخ پر زیر زمین پانی غور فرمائیں اگرچہ نمونے سے پانی کے اوپر آنے اور بخارات بن کر دوسرے علاقوں (شمالی نشیبی میدان) میں پرتوں کو بنانے کا اندازا ہوتا ہے، تاہم ان علاقوں میں پرتیں نہیں نظر آتیں کیونکہ پرتیں بہت پہلے ابتدائی ہیس پیرین دور میں بن گئی تھیں لہٰذا وہ بعد میں جمع ہونے والے مادّے کے نیچے دفن ہوگئی ہوں گی۔
زمینی کرۂ ہوا زمین کے کرۂ ہوا کی پانچ پرتیں ہوتی ہیں۔ عموماً، اونچائی اور بلندی کے ساتھ ہوائی دباؤ اور کثافت میں کمی آتی ہے، لیکن جب فضاء کو مختلف پرتوں میں بانٹنا ہو تو درجہِ حرارت ایک مستقل مقدار سمجھی جاتی ہے۔ درجہِ حرارت اونچائی کے ساتھ نسبتاً دائمی انداز میں کم ہوتا ہے، چنانچہ فضائی پرتوں کو بانٹنے کے لئے درجہِ حرارت کا استعمال کیا جاتا ہے۔ مندرجہ ذیل فضائی پرتیں ملاحظہ کیجئے؛ نچلی پرت سے لیکر اونچی ترین پرت تک:
مریخ پر زیر زمین پانی  سرخ سیارے پر کچھ جگہوں میں پرت دار چٹانوں کے گروہ نظر آتے ہیں۔ چٹانی پرتیں کافی بڑے تصادمی گڑھوں کے فرش پر موجود پائیدانی شہابی گڑھوں کی مزاحمتی ٹوپیوں کے اندر اور عریبیہ کہلانے والے علاقے کے اندر بھی موجود ہیں۔ کچھ جگہوں پر پرتیں باقاعدہ نمونوں کی شکل میں ترتیب دی ہوئی ہیں۔ یہ سمجھا جاتا ہے کہ پرتیوں کو اس جگہ پر آتش فشانوں، ہوا نے رکھا ہے یا پھر وہ کسی جھیل یا سمندر کا پیندا تھیں۔ حسابات اور نقول بتاتی ہیں کہ معدن کو لاتا ہوا زیر زمین پانی انہی جگہوں پر نکلتا ہے جن میں پتھروں کی خاصی پرتیں ہوتی ہیں۔ ان نظریات کے مطابق گہرے درے اور بڑے شہابی گڑھے پانی زیر زمین سے حاصل کرتے ہوں گے۔ مریخ کے علاقے عریبیہ میں واقع کئی شہابی گڑھوں میں پرتوں کے گروہ موجود ہیں۔ ان میں سے کچھ پرتیں موسمی تبدیلی کا نتیجہ ہیں۔ مریخ کے محوری گردش کا جھکاؤ ماضی میں بارہا مرتبہ تبدیل ہوا ہے۔ کچھ تبدیلیاں بڑی ہیں۔ آب و ہوا میں تغیر کی وجہ سے اکثر مریخ کا کرۂ فضائی زیادہ دبیز ہوگا اور اس میں زیادہ نمی موجود ہوگی۔ کرۂ فضائی میں موجود دھول بھی کم زیادہ ہوتی رہتی ہے۔ یہ سمجھا جاتا ہے کہ ایسی بکثرت تبدیلیوں نے چیزوں کو شہابی گڑھوں اور پست علاقوں میں بھرنے میں مدد دی ہے۔ معدنیات سے لبریز اوپر آتے ہوئے پانی نے ان چیزوں کو سختی سے چپکا دیا۔ نمونے یہ بھی بتاتے ہیں کہ جب شہابی گڑھے پرت دار چٹانوں سے بھر جاتے ہیں تو شہابی گڑھے کے ارد گرد مزید پرتیں بن جاتی ہیں۔ لہٰذا نمونہ سے معلوم ہوتا ہے کہ پرتیں درون شہابی گڑھے بھی بن سکتی ہیں؛ ان علاقوں میں پرتوں کا مشاہدہ کیا گیا ہے۔
رنگین پینسل رنگین پینسل (انگریزی:colored pencil، coloured pencil یا pencil crayon) ایک ذریعہ فن ہے جو مخروط لکڑی کی شکل میں بنتی ہے۔ گرافائٹ اور کوئلے کے پنسیلوں کے بر عکس یہ موم یا آئل سے بنتی ہیں۔ اس کی کئی پرتیں ہوتی ہیں اور کئی بائنڈنگ ایجنٹس شامل ہوتے ہیں۔
جنۃ العریف یہ عمارت ایک پاشیو دے لا ایس کوئییہ (پانی کا راستہ یا پانی کے باغ کا صحن) جس میں کئی پھول کی پرتیں، فوارے، آرام گاہیں، قناتیں اور جارڈن ڈی لا سلطانہ (سلطانہ گارڈن یا صنوبر کے صحن) کی طرف سے بنائے گئے ایک طویل تیرنے کی جگہ ہے۔
مریخ پر پانی مریخ پرکئی جگہوں پر پائی جانے والی چٹانیں اکثر بطور پرتوں کے پائی جاتی ہیں جن کو پرت مطبق طبقہ کہتے ہیں۔ پرتیں کئی طریقوں سے بنتی ہیں جس میں آتش فشانوں، ہواؤں اور پانی کے ذرائع شامل ہیں۔ مریخ پر ہلکے رنگ کی چٹانیں آبیدہ معدنیات جیسے کہ گندھک کا نمک اور مٹی سے نسبت رکھتی ہیں۔
مریخ پر زیر زمین پانی زیر زمین پانی کے اس نمونے سے یہ اندازا لگایا گیا ہے کہ پرتیں اس قسم کی جگہوں پر بنتی ہیں جہاں سطح پر پانی بخارات بنتا ہے۔ ان کو مریخی سیاروی مساحت کنندہ اور مریخی پڑتال گر مدار گرد پر لگے ہوئے ہائی رائز کی مدد سے دریافت کیا گیا ہے۔ پرتوں کو آپرچونیٹی کے اترنے کی جگہ اور عریبیہ کے قریب دیکھا گیا ہے۔ پائیدانی شہابی گڑھے کی ٹوپی کے نیچے میدان میں اکثر طرح طرح کی پرتیں ظاہر ہوتی ہیں۔ پائیدانی شہابی گڑھے کی ٹوپی نیچے کے مادّے کو کٹاؤ سے روکے رکھتی ہے۔ یہ تسلیم کیا گیا ہے کہ مادّہ جو ابھی تک صرف پائیدانی شہابی گڑھے کی ٹوپی کے نیچے پایا گیا ہے ماضی میں اس نے پورے علاقے کو ڈھکا ہوا ہوگا۔ لہٰذا وہ پرت جو صرف پائیدانی شہابی گڑھے کے نیچے دکھائی دے رہی ہے اس نے کبھی پورے علاقے کو ڈھکا ہوا ہوگا۔
وادیٔ سندھ کی تہذیب موہنجوداڑو میں کل نو رہائشی پرتیں نکالی گئیں۔ ان میں کئی جگہ سیلاب کی تباہ کاریوں کا ثبوت ملتا ہے ۔ لیکن ان متفرق ادوار کی مادی ثقافت میں زرا فرق نہیں ملتا۔ نہ زبان بدلی ہے نہ رسم و الخط۔ ایک ایسی زمین پر جس میں زبان نے متعدد شکلیں اختیار کی ہیں اور رسم الخط بار بار یکسر تبدیل ہوا ہے اس میں ایک ہی رسم الخط کا تسلسل اس کے ٹہراؤ کا بڑ ثبوت ہے ۔