Top 10 similar words or synonyms for غیاث

علاء    0.884409

علاؤ    0.872299

عماد    0.824100

صلاح    0.817179

زنگی    0.804954

معز    0.781058

بلبن    0.770345

خلجی    0.765868

حسام    0.762616

برہان    0.755830

Top 30 analogous words or synonyms for غیاث

Article Example
حفص بن غیاث پورا نام حفص بن غياث بن طلق بن معاويہ النخعی الأزدی الكوفی ہے، کنیت ابو عمر تھی
حفص بن غیاث یہ امام ابو حنیفہ کے ارشد تلامذہ میں سے تھے۔ امام صاحب کے شاگردوں میں چند بزرگ نہایت مقرب اور با اخلاص جنکی نسبت تھے وہ فرمایا کرتے تھے کہ "تم میرے دل کی تسکیں اور میرے غم کے مٹانے والے ہو۔" حفص کی نسبت بھی امام صاحب نے یہ الفاظ ارشاد فرمائے ہیں۔ ہارون الرشید کے دور میں تیرہ برس کوفہ میں اور دو برس بغداد میں قاضی رہے
حفص بن غیاث حفص بن غیاث نے194ھ- 810ء میں وفات پائی۔
غیاث الدین محمد غوری تو درِیں تقلید خود تنہاء بِمانی جاوِداں
غیاث الدین بلبن خاندان غلاماں کا آٹھواں سلطان۔ بطور غلام ہندوستان لایا گیا۔ سلطان التمش کی نگاہ مردم شناس نے اس کو خرید لیا۔ اس نے اس کو خرید لیا۔ اس نے اپنے دور حکومت میں امرا اور سرداروں کا زور توڑ کر مرکزی حکومت کو مضبوط کیا۔ بغاوتوں کو سختی سے کچل کر ملک میں امن و امان قائم کیا اور سلطنت کو تاتاریوں کے حملے سے بچایا۔
غیاث الدین بلبن بڑا مدبر ، بہادر اور منصف مزاج بادشاہ تھا۔ علماء و فضلا کا قدر دان تھا۔ اس کے عہد میں شراب کی خرید و فروخت اور راگ رنگ کی محفلوں کے انعقاد کی اجازت نہ تھی۔ انصاف کرتے وقت ہندو مسلم اور غریب اور امیر کی تمیز روا نہ رکھتا تھا۔ مجرموں کو سخت سزائیں دیتا ۔ لیکن رعایا کے لیے بڑا فیاض اور روشن خیال تھا۔
غیاث الدین محمد غوری غیاث الدین محمد بن سام غوری سلطنت کا حکمران تھا۔ وہ 1163ء میں تخت نشین ہوا اور 11 فروری 1203ء تک مسلسل تخت غوری پر متمکن رہا۔ غیاث الدین محمد کے زمانہ میں غوری سلطنت کی حدود گرگان سے لے کر بنگال تک پھیل چکی تھیں۔
غیاث الدین محمد غوری سلطان غیاث الدین محمد کو جب خبر ہوئی تو خوب بگڑا۔ قرامطہ کا اِمام صدر الدین علی ہیصم نیشاپوری غور چھوڑ کر نیشاپور چلا گیا۔ ایک سال بعد ایک دعائیہ قصیدہ لکھ کر سلطان غیاث الدین محمد سے معذرت چاہی۔ اُس قصیدہ کا مشہور شعر یہ ہے:
غیاث الدین محمد غوری بروز منگل 27 جمادی الاول 599ھ مطابق 11 فروری 1203ء کو سلطان غیاث الدین محمد بن سام نے 63 سال کی عمر میں ہرات شہر میں وفات پائی۔ سلطان غیاث الدین محمد نے 40 سال شمسی اور قریباً 43 سال قمری حکمرانی کی۔
غیاث الدین بلبن اس کی عملی زندگی کا آغاز سقا ( ماشکی )کی حیثیت سے ہوا تاہم جلد ہی وہ سلطان کا مقرب خاص بن گیا