Top 10 similar words or synonyms for عیاشی

جفا    0.686190

حرص    0.680114

ضلالت    0.674874

درویشی    0.667140

عریانی    0.639132

جھاڑ    0.632149

فحاشی    0.630143

تکبر    0.629392

ذلت    0.628160

فسق    0.626964

Top 30 analogous words or synonyms for عیاشی

Article Example
مظاہر علوم سہارنپور ’’حضوراکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے ظاہر وباطن میں تضاد تھا ‘‘ (تفسیر عیاشی ۲/۱۰۱)
مظاہر علوم سہارنپور اسی طرح ایک اورشیعہ مصنف محمد بن مسعود عیاشی کے قلم سے یہ غلیظ عبارت نکلتی ہے ۔
کاغذی کرنسی ڈالر چھاپ چھاپ کر ہوتی یہ عیاشی دیکھ کر یورپ والوں کو بھی مزے لوٹنے کا خیال آیا۔ چونکہ یورپ کا کوئی ملک اتنا مضبوط نہیں تھا کہ اکیلا امریکی ڈالر کا مقابلہ کر سکے اس لیے انہوں نے مل کر یورو جاری کیا جس کے بعد ڈالر کی اجارہ داری میں قدرے زوال آیا۔ یورو کو اصل سہارا جرمنی کے مضبوط مارک سے ملا ہے۔ یورپ کے صرف دو ممالک (ناروے اور برطانیہ) خاطر خواہ مقدار میں خام تیل کی پیداوار رکھتے ہیں اور ان دونوں ممالک نے یورو کرنسی نہیں اپنائی۔
جريان السیلان الزُھری،النکال،حُرقۃ العقوبہ،آلھۃ الجمال(عندالاقدمین)(حسن کی دیوی)، حرقہ - سوزش زھرا، عقوبہ- سزا ،نکال - عبرت انگیز سزا، یہ سب سوزاک کے نام ہیں۔ بدکاری ، عیاشی و بدمعاشی سےجوامراض خبیثہ (سوزاک،و آتشک)لاحق ہوتے ہیں انہیں عرفا امراض زھریہ کیاجاتا ہے۔ جو اسی زھرہ(حسن کی دیوی)کی طرف منسوب کئے جاتے ہیں۔جو لوگ اس مرض میں مبتلا ہیں وہ اچھی طرح اندازا رکھتے ہیں۔کہ یہ مرض بدکاریوں کی کتنی عبرت انگیز سزا(نکال)ہے۔یہ عجیب بات ہے کہ فطرت نے جانوروں کو اس عذاب میں مبتلا نہیں کیاہے۔جیسا کہ وہ بواسیر سے بھی بچے ہوئے ہیں۔
اشتراکیت جو یہ ہمیں علماء تبلیغ کرتے ہیں انکی اپنی ذاتی زندگی اس کے بالکل الٹ ہے انکا رہن سہن، خوراک، علاج سفر،غرض ہر سہولت اور آسائش موجود ہے انکی اولادیں یورپ اور امریکا میں تعلیم اور ہر عیاشی کا مزہ لوٹ رہے ہیں،مذہبی جماعتوں کے رہنماﺅں کی زندگیاں اور ان کے بچوں کے حالات آج عوام سے ڈھکے چھوپے نہیں ہیں جو عوام کی زندگیوں سے مختلف ہیں،جب کے یہ پھر بھی بڑی بے شرمی اور ہٹ دھرمی سے ہمیں صبر اور قناعت کاسبق دیتے نہیں تھکتے اور خود نہیں بلکہ صرف ہمیں ہی جہنم کے خوف سے ڈراتے ہیں، یہاں مجھے چور مچاے شور کی کحاوت یاد آتی ہے۔
ہينرک ابسن ناروے کا عظیم ڈراما نگار اور شاعر۔ ابھی بچہ ہی تھا کہ باپ نے ساری جائداد عیاشی کی بھینٹ چڑھا دی۔ اور ابس کو پندرہ برس کی عمر میں ایک فارمیسی کی ملازمت سے زندگی شروع کرنا پڑی۔ 1851ء میں نیشنل تھیٹر میں سٹیج ڈائرکٹر بن گیا۔ 1864ء میں اپنے ملک کے سیاست دانوں کی پالیسی سے بے زار ہو کر جرمنی اور پھر اٹلی چلا گیا۔ 1891ء میں واپس ناروے آیا۔ پہلے پچیس سال میں تاریخی ڈرامے لکھے۔ معاشرتی مسائل پر توجہ دینے کا دور 1877سے شروع ہوتا ہے۔ جب اس نے مشہور ڈراما سماج کے معمار پیش کیا۔ ابسن کے ڈرامے دنیا کی تمام بڑی زبانوں میں ترجمہ ہوچکے ہیں۔
غزوہ بدر رات بھر قریشی لشکر عیاشی و بدمستی کا شکار رہا۔ خدا کے نبی نے خدا کے حضور آہ و زاری میں گزاری اور قادر مطلق نے فتح کی بشارت دے دی جس طرف مسلمانوں کا پڑاؤ تھا وہاں پانی کی کمی تھی اور ریت مسلمانوں کے گھوڑوں کے لیے مضر ثابت ہو سکتی تھی۔ لیکن خداوند تعالٰی نے باران رحمت سے مسلمانوں کی یہ دونوں دقتیں دور کر دیں۔ ریت جم گئی اور قریشی لشکر کے پڑاؤ والی مقبوضہ چکنی مٹی کی زمین پر کیچڑ پیدا ہوگیا۔
لیڈیا دارہ اس خفیہ اجلاس میں ایک حکم نامہ تیار ہوا جس میں کہا گیا کہ 4 دسمبر کی صبح فوج فلاڈیلفیا سے روانہ ہوکر واشنگٹن پر حملہ کردے گی، برطانوی فوج کو یقین تھا کہ وہ واشنگٹن کی فوج کو غفلت کی حالت میں تباہ وبرباد کردیں گے کیونکہ وہ سوچ رہے تھے کہ واشنگٹن کی فوج بے سروسامانی اور مشکلات کا شکار ہے جب کہ فلاڈیلفیا پر قبضہ کرنے کے بعد برطانوی فوج نے کئی روز جشن منایا جس کے باعث جارج واشنگٹن کو اپنی پوزیشن بہتر بنانے کا موقع مل گیا، انہی دنوں لیڈیا نے جنرل جارج واشنگٹن کو اہم معلومات دینے کا سلسلہ شروع کیا، وہ برطانوی سپاہیوں کے پاس جاتی جو زخمی ہوتے اور ان کی خدمت کرتی جبکہ بعض سپاہیوں کو کھانا اور دیگر اشیاء فراہم کرتی، اس خدمت اور دوستی کے ماحول میں برطانوی سپاہیوں نے اندر کے راز دینا شروع کردیے جو لیڈیا جارج واشنگٹن تک پہنچانے لگی، لیڈیا کا ایک بیٹا فوج میں تھا جس کو وہ اہم معلومات فراہم کرتی تھی، برطانوی فوج نے فلاڈیلفیا پر قبضہ کیا تو جنرل واشنگٹن کے سپاہیوں کے پاس ساز وسامان کی کمی تھی، ان کے پاس خوراک اور کپڑے بھی انتہائی قلیل تھے جس کے باعث وہ لڑنے کے قابل نہ تھے، سردیوں کا موسم تھا، سپاہیوں کے پاس گرم کپڑے نہ ہونے کے باعث جنرل واشنگٹن نے ان سے کہا کہ وہ آرام کریں، اس کے برعکس برطانوی فوجی پرآسائش زندگی گزار رہے تھے، آہستہ آہستہ برطانوی فوجی افسروں نے فلاڈیلفیا میں عیاشی شروع کردی کیونکہ وہ جانتے تھے کہ واشنگٹن کے سپاہیوں کی صورتحال اتنی خراب ہے کہ وہ جنگ کرنے کے قابل نہیں ہیں، لیڈیا دارہ تمام حالات سے واشنگٹن کو باخبر کرتی رہی، جنرل واشنگٹن نے اسی دوران برطانوی فوج کی حرکات وسکنات پر گہری نظر رکھی، تاکہ اس دوران برطانوی فوج کی غفلت اور عیاشی کا فائدہ اٹھا کر ان سے مقابلے کے لیے اپنے سپاہیوں کو تیار کر سکے.
یزید بن عبدالملک حضرت عمر بن عبدالعزیز کی وفات کے بعد یزید بن عبدالملک تخت نشین ہوا۔ یہ ایک اوباش اور عیاش طبع انسان تھا۔ عمر بن عبدالعزیز ، سلیمان بن عبدالملک کی وصیت کو کالعدم قرار دے کر یزید کی نامزدگی کو ختم نہ کر سکے تاہم وفات سے قبل بلا کر اسے عدل و انصاف سے حکمرانی کرنے کی تلقین کی۔ لیکن اس کا جذبہ عیاسی عیاشی عود کر آیا اور عمر ثانی کی وفات کے چالیس روز بعد ہی ان کی جاری کردہ تمام اصلاحات کا دوبارہ خاتمہ کرکے وہی پرانا نظام دوبارہ نافذ کر دیا۔ اس کے عہد حکومت میں مضری اور حمیری آویزش دوبارہ زندہ ہوئی ۔ اور اسی باہمی کش مکش کی بدولت بنو امیہ کا زوال قریب سے قریب تر ہوگیا۔
آل احمد سرور آل احمد ہمارے اردو کے سر بر آوردہ نقاد ہیں اور موجودہ نسل کے ادبی مذاق کو مرتب بنانے میں ان کے تنقیدی مضامین کا بہت اہم کردار رہاہے۔ سرور صاحب ایک کھلا ذہن رکھنے والے نقاد ہیں انہوں نے خود کو کسی گروہ سے وابستہ نہیں کیا اور کبھی آزادی فکر و نظر کا سودا نہیں کیا۔ انقلاب روس کے نتیجے میں جب ترقی پسند تحریک کا آغاز ہوا تو انہوں نے اس تبدیلی کو وقت کا تقاضا قرار دیا اور اس کا خیر مقدم کیا لیکن جب ترقی پسند ادب، ادب نہیں رہا تو وہ اس سے کنارہ کش ہو گئے۔ انہوں نے واضح الفاظ میں کہا کہ میں ادب کا مقصد نہ ذہنی عیاشی سمجھتا ہوں اور نہ اشتراکیت کا پرچارک۔