Top 10 similar words or synonyms for رچا

دیویکا    0.778440

پریتی    0.769149

زنٹا    0.761311

روجا    0.758533

رنجیتا    0.758380

شہانہ    0.757766

ارمیلا    0.757197

کرشنامورتی    0.753386

اندرجیت    0.752367

ٹسکا    0.751963

Top 30 analogous words or synonyms for رچا

Article Example
رچا چڈا رچا چڈّھا (لاطینی: Richa Chadda) ایک بھارتی فلمی اداکارہ ہے۔
رچا پالود رچا پلّود (لاطینی: Richa Pallod) ایک بھارتی فلمی اداکارہ ہے۔
نظمی میاں مارہروی الفت نبی کی روح میں اپنی رچا کے دیکھ
ریچا گنگوپادھیائے رچا گنگوپادیای (لاطینی: Richa Gangopadhyay) ایک بھارتی فلمی اداکارہ ہے۔
اتن اتن رقص کی ایک قسم ہے جو افغانستان اور پاکستان کے پشتون علاقوں میں رچا جاتا ہے۔ یہ رقص پشتونوں میں وقت مسرت کیا جانے والا رقص ہے۔ پہلے یہ ایک علاقائی رقص تصور کیا جاتا تھا لیکن اب یہ افغانستان میں یہ رقص، قومی نشان کے طور پر ابھر رہا ہے۔
انکیت تیواری اسکے بعد یہ آزاد موسیقار بن گئے۔ رچا شرما کا گایا ہوا جھانسی کی رانی لکشمی بائی پر تیارکردہ "خوب لڑی مردانی" پراجیکٹ، جو اسٹار پلس کی پیشکش تھی، کو سنگیت دیا۔ اس پراجیکٹ کے دوران ہی انہیں عاشقی 2 میں گانے کا موقع ملا۔
خضر راہ تغزل اقبال کے کلام کا خاصا ہے۔”خضر راہ“ اگرچہ ایک نظم ہے جس میں حیات و کائنات کے حقائق اور ٹھوس مسائل کو موضوع سخن بنا یا گیا ہے۔ مگر چونکہ اقبال کے مزاج میں شعریت اور تغزل رچا بسا ہے اس لئے غزلوں کے علاوہ ان کے بیشتر نظموں میں تغزل کا رنگ نمایاں ہے۔ خضر راہ کے بعض حصوں اور شعروں میں ہمیں اقبال کا یہی رنگ تغزل نظر آتا ہے۔
زعفران زعفران کا دوسرا نام کیسر ہے۔ کیسر کشمیر سے آیا ہے جہاں اسکی کاشت عام اور کاروباری پیمانے پر ہوتی ہے اور اسکی وجہ سے وادی کشمیر اسکے رنگوں میں کھو جاتی ہے۔ کیسر پودے کے علاوہ انسانی نام کے طور پر بھی استعمال ہوتا ہے۔ کیسر ہمارے گیتوں اور محاوروں میں رچا ہوا ہے۔ پنجابی گیت: چنی کیسری تے گوٹے دیاں تاریاں اسکی عام مثال ہے۔
تعدد ازواج تعدد ازواج قبل از اسلام تعدد ازواج کا رواج تھا عام طورپر محبت یا بچوں کی کثرت ایک سے زیادہ ازواج کی سبب تھی۔ بعض اوقات یہ تصور بھی کہ خاندان میں عورتیں زیادہ اور مرد کم ہیں اورعورت کو تحفظ کی ضرورت ہے لہذا تعدد ازواج کا سلسلہ چل نکلا ۔ اس میں کوئی قید نہیں تھی، امراء اور مال دار لوگ بہت زیادہ شادیاں رچا لیتے تھے۔ جو عورت اچھی محسوس ہوتی اسے اپنے گھر لے آتے۔
سرحد کا افسانہ اس دور میں ایک اور اہم نام ڈاکٹر عبدالرحیم کا ہے۔ ان کا افسانوی مجموعہ ”خون کا داغ“ کے عنوان سے شائع ہوا۔ ان کے ہاں تاریخ کا تصورخوبصورت رنگوں میں رچا ہوا ملتا ہے۔ وہ ماضی کے تصورِ سے حسین دنیا پیدا کر تے ہیں۔ تاریخ کے کسی عہد سے بات شروع کرتے ہیں اور ماضی کے دھارے پر بہتے ہوئے حال تک آتے ہیں۔ ان کے افسانوں میں ”خون کا داغ“ اور ”رقص الموت“ اسی قسم کے افسانے ہیں۔ ان کے کردار ماورائی دنیا کے کردار ہیں لیکن افسانے کی فضاءاکتا دینے والی نہیں ہے۔ یہ کردار پیار ومحبت کے پیامبر اور عشق میں لافانی ہیں۔