Top 10 similar words or synonyms for الناصر

ابوالمیمون    0.785172

المنصور    0.767717

معز    0.766290

بالله    0.766244

خلیفۃ    0.762931

ابوالعباس    0.758801

الداخل    0.757694

دیلمی    0.753907

الظاہر    0.752438

عماد    0.747553

Top 30 analogous words or synonyms for الناصر

Article Example
الناصر لدین اللہ علامہ ابن جوزی نے المنتظم میں لکھا ہے کہ اُس نے اپنی کنیز کو اپنی تحریر کے خط کی مشق کروا رکھی تھی جو بالکل خلیفہ ناصر کے خطِ تحریر کے موافق لکھا کرتی تھی اور اُس سے ناصر احکام لکھوایا کرتا، کسی کو یہ شناخت نہیں ہوتی تھی کہ یہ خلیفہ کا لکھا ہوا کے نہیں؟
الناصر لدین اللہ ممالک محروسہ میں بیعت کے لیے قاصد روانہ کیے۔ صدر الدین شیخ الشیوخ کو محمد بن بہلوان والی ہمدان و اصفہان و رے کے پاس بھیجا۔ سب نے آخرکار بیعت کرلی۔582ھ/ 1186ء میں بہلوان والی ہمدان و اصفہان و رے کی وفات کے بعد اُس کا بھائی کزل ارسلان ملقب بہ عثمان حکمران ہوگیا۔ طغرل عثمان کی نگرانی میں تھا، سو وہ نگرانی سے بھاگ نکلا اور امراء اور اراکین کو اپنے ساتھ ملا لیا اور عثمان پر حملہ آور ہوا۔ عثمان نے اپنا سفیر دربارِ خلافت بھیجا۔ طغرل نے بھی چند شہر قبضہ میں کرکے سفیر دربارِ خلافت بھیج دیا اور دارالسلطنت کی تعمیر میں اجازت چاہی۔ اِس سے پیشتر سلاطین سلجوقیہ کی حکومت کا بہت حد تک عمل دخل اور اثر و رسوخ بغداد میں جاری رہا تھا، مگر المقتضی لامر اللہ نے سلاطین سلجوقیہ سے اِس تعلق کو منقطع کردیا تھا، اِس لیے داراسلطنت بغداد بے مرمت ہوگیا مگر اب ناصر نے کزل ارسلان عثمان کے سفیر کو باریابی بخشی اور عزت و توقیر کی اور معاونت کا وعدہ کیا اور طغرل کے سفیر کو بغیر کسی جواب کے واپس بھیجا۔ان سفیروں کی واپسی کے بعد ناصر نے سلاطین سلجوقیہ کے دارالسلطنت کے انہدام کا حکم جاری کیا جس پر نہایت تیزی سے علمدرآمد کیا گیا۔ ماہِ صفر 584ھ/ اپریل 1188ء میں دربارِ خلافت سے وزیر السلطنت جلال الدین ابوالمظفر عبیداللہ بن یونس ایک لشکر عظیم لے کر کزل عثمان ارسلان کی کمک کو روانہ ہوا۔ ہمدان میں کزل عثمان کے اجتماع سے پیشتر طغرل سے مقابلہ ہوا۔ میدانِ جنگ طغرل کے ہاتھ رہا، لشکر بھاگ کھڑا ہوا۔ وزیر السلطنت گرفتار ہوگیا۔ اِس کے بعد ہی کزل عثمان نے طغرل کو آ لیا اور فتح نصیب ہوئی۔ کزل عثمان نے طغرل کو گرفتار کرکے قلعہ میں نظربند کردیا۔ کزل عثمان استحکام و اِستقلال کے ساتھ کل صوبہ جات سلطنت پت حکومت کرنے لگا۔ 585ھ/ 1189ء میں طغرل سوتے ہوئے قتل کردیا گیا۔ اور سلطنت سلجوقیہ کا آخری بادشاہ بھی دنیاء میں بغیر کسی وارث کے رخصت ہوا (علامہ ابن خلدون نے مکمل تفصیل بیان کردی ہے مگر یہاں تلخیص بیان کی گئی ہے)۔
الناصر لدین اللہ ناصر کی سخاوت گزشتہ تمام خلفائے عباسیہ کے مقابلہ میں بڑھ گئی تھی۔ اگر کسی فقیر کو کچھ مال یا رقم دیتا تو خوب جی بھر کر دیتا اور اُس فقیر کو کوئی حاجت سوال درازی کی نہ رہتی۔ سخاوت کا ایک مشہور قصہ امام جلال الدین سیوطی (متوفی 911ھ)نے تاریخ الخلفاء میں نقل کیا ہے کہ:
الناصر لدین اللہ خلیفہ ناصر کے ہم عصر سلطنت غوری خاندان کے غوری سلاطین یہ تھے:
الناصر لدین اللہ خلیفہ ناصر کے ہم عصر خاندان غلاماں، سلطنت دہلی، ہندوستان کے حکمران یہ تھے: